اسلامک وظائف

گھریلو کام کاج کی تھکاوٹ کا علاج

ہر چیز کی ایک حد مقرر ہے-اسی طرح مسلسل کام کرنے سے ہمارا جسم بھی ایک پوائنٹ پر آکے طاقت کھو دیتا ہے-ہماری گھریلو خواتین کو گھر میں بے شمار کام کرنے ہوتے ہیں-گھر والوں کے لیے ناشتہ بنانا پھر دوسروں کے کپڑے وغیرہ دوھونا اور کھانا پکانا وغیرہ-کبھی کبھی تو ایک کام دن میں کئی مرتبہ دہرانا پڑتا ہے-اسی لیے ہمارا جسم اچھی خاصی تھکاوٹ کا شکار ہو چکا ہوتا ہے-اور اگر کسی دن زیادہ کام کر لیں تو ہڈیوں میں درد بھی شروع ہو جاتا ہے-پھر ہم ڈاکٹر یا فیزیوتھراپسٹ کے جاتے ہیں-لیکن اگر آپ اتنے استطاعت والے نہیں ہیں کہ ڈاکٹر کے پاس جاسکیں تو تیتنس (33) دفعہ سبحان اللہ تینتس(33) دفعہ الحمداللہ اور تینتس (33) دفعہ ہی اللہ اکبر پڑھیں-

حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے یہ تسبح حضرت فاطمہ کو سکھائی تھی جب وہ چکی پیستے تھک جاتیں تھیں-ہمیں چھوتی موٹی تھکاوٹ ہو تو ہم ڈاکٹر کے پاس نہیں جاتے بلکہ یہ کہہ دیتے ہیں کہ خود ہی ٹھیک ہوجائے گی-لیکن کچھ نا کرنے سے بہتر ہیں یہ تسبیح کریں کیونکہ ہمارے پیارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی بیٹی حضرت فاطمہ بھی یہ تسبح کیا کرتیں تھیں جب وہ تھک جاتیں تھیں- تسبح کرتے ہوئے اس بات کا بھی یقین رکھیں گے اللہ پاک میری تھکاوٹ کو ضرور دور کرے گا-ہم کوئی بھی کام کریں تو ہمارا یقین مضبوط ہونا چاہیے کیونکہ دعائیں بھی وہیں قبول ہوتیں ہیں جن پر ہمیں کامل یقین ہوتا ہے

ہم اکثر کہتے ہیں کہ میری دعا قبول نہیں ہوئی یہ اسی لیے ہی ہے کیونکہ ہمارا ایمان کمزور ہوتا ہے-اگر ہمیں کسی چیز میں کامیابی چاہیے تو اس کا پہلا اصول یہی ہوگا کہ ہمیں یقین ہو کہ ہم کامیاب ہو جائیں گے-

Leave a Comment