اسلامک وظائف

ہرمرض سےحفاظت کی نبوی دعا۔

ہرمرض سےحفاظت

ہرمرض سےحفاظت کی نبوی دعا۔

ہرمرض سےحفاظت کی نبوی دعا۔ ۔ دوستو دنیا کا کوئی ایسا شخص نہیں جو زندگی میں کبھی نہ کبھی بیمار نہ ہوا ہو ۔ بیماری کا سبب کچھ بھی ہو سکتا ہے۔ ایک ہی فضا میں رہنے والے ایک ہی غذا کھانے والے اور ایک ہی ماحول میں پروان چڑھنے والے مختلف بیماریوں کا شکار ہوتے ہیں ۔

اگرچہ بیماری بھی الله کی مشیت سے ہوتی ہے۔ اور جس کی قسمت میں مرض ہوتا وہی بیمار ہوتا ۔

خواہ اس کا سبب کچھ بھی ہو اسی طرح شفا بھی الله سبحانہ تعالٰی کے ہاتھ میں ہے ۔

کبھی سپیشلسٹ کی دوا کا اثر ہوتا ہے کبھی نہیں ہوتا سائنسی تجربات کی کسوٹی پر پرکھ کر اور آزما کر دوا بنانے والے بھی اپنے عزیز ترین کو نہ تو بیماری سے بچا سکتے ہیں نہ شفا دے سکتے ہیں ۔
جس طریقہ علاج میں جس کے لیے الله کریم نے شفا رکھی ہے ۔

طب ہو یا مٹی کی پھکی

اسے وہیں سے ملے گی اب وہ ایلو پیتھی ہو ہومیو ہو ۔ طب ہو یا مٹی کی پھکی
اور جب دوا کا اثر نہیں ہونا تو دنیا کا کون سا سائنسدان یا ڈاکٹر ہے جو اس دوا میں اثر ڈال سکے ۔

اگر ان کے اختیار میں ہوتا تو وہ بیماری و موت کا شکارنہ ہوتے۔ اور نہ ہی ان کے عزیز و اقارب بیمار پڑتے
بیماری کا علاج ضرور کرنا چاہیے ۔

شفا دینا الله کا اختیار

۔جہاں جس کی پہنچ ہے اور جس کا جتنا اختیار ہے ۔لیکن شفا من جانب الله ہونے کا یقین رکھنا بھی ضروری ہے ۔ کیونکہ شفا دینا الله کا اختیار ہے
ہمارا ایمان ہے کہ مرض ہو یا شفا، سب اللہ تعالیٰ کی طرف سے ہے ۔

اس لیے علاج کے ساتھ ساتھ بیماری سے حفاظت کے لیے بھی اللہ تعالیٰ کے حضور دعا گو ضرور ہونا چاہیے ۔

چناچہ بیماری حفاظت کی بہت ساری دعائیں قرآن و حدیث میں منقول ہیں ۔ انہیں میں سے ایک دعا کے الفاظ حدیث پاک کی کتاب ابوداؤد میں موجود ہیں ۔۔

اللّٰھُمَّ اِنِّی أَعُوذُ بِکَ مِنَ الْبَرَصِ، وَالْجُنُو’نِِ،وَالْجُذَامِ، وَمِنْ سَیِّئْ الْأَسْقَامِ
بچا۔یعنی اے اللہ میں تجھ سے پناہ چاہتا ہوں برص کی بیماری سے ، پاگل پن سے ، کوڑھ سے اور تمام نقائص اور بیماریوں سے
حضرت انس بن مالک رضی اللہ عنہ سے روایت ہے ۔ رسول ﷺ یہ دعا فرمایا کرتے تھے کہ اللّٰھُمَّ اِنِّی أَعُوذُ بِکَ مِنَ الْبَرَصِ، وَالْجُنُو’نِ،وَالْجُذَامِ، وَمِنْ سَیِّئْ الْأَسْقَامِ-لہذا اللہ پاک ہمیں بھی اس نبوی دعا کو پڑھنے والا بنائے اور ہمیں تمام بیماریوں سے محفوظ فرمائے۔۔۔۔آمین ۔۔۔۔السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ۔۔۔۔

Leave a Comment