اسلامک معلومات

پانچ ایسی باتیں جن کی وجہ سے رزق میں تنگی ہوتی ہے

پانچ ایسی باتیں

پانچ ایسی باتیں جن کی وجہ سے رزق میں اتنی تنگی ہوتی ہے ۔ کہ امیر سے امیر شخص بھی غریب ہو جاتا ہے۔

پانچ ایسی باتیں جن کی وجہ سے رزق میں اتنی تنگی ہوتی ہے کہ امیر سے امیر شخص بھی غریب ہو جاتا ہے۔ ۔۔۔ ۔رزق ایک ایسی نعمت ہے۔ جس کی تقسیم کا اختیار و ذمہ مالکِ کائنات نے اپنے پاس رکھا ہے۔
.کوئی شک نہیں کہ وہ ہر انسان کو طیب و طاہر اور پاک رزق عطا فرماتا ہے.
اس رزق میں اضافہ و فراخی کے مواقع بھی بخشتا ہے۔

رزقِ حلال کی طلب

مگر اکثر انسانوں کی فطرت ہے۔ کہ وہ یہ بھول جاتے ہیں۔  رزق کا وعدہ رب تعالیٰ کی ذات نے کر رکھا ہے۔ لہٰذا وہ ہماری قسمت میں لکھا گیا .
دانہ پانی تقدیر کے مطابق ضرور عطا فرماتا ہے۔ تاہم کچھ لوگ توکؔل اوریقین کی کمی کا شکارہو  کر بعض اوقات ناجائز و حرام ذرائع کے استعمال سے اپنا حلال کا رزق بھی کھو دیتے ہیں۔
اللہ تعالٰی اور اس کے حبیب ﷺ نے ہمیں رزقِ حلال کی طلب، کمانے کا طریقہ، تجارت اور کاروبار کے مکمل اصول سکھائے اور بتائے ہیں۔
لہذا آج کی اس ویڈیومیں ایسی ہی پانچ باتیں بتاؤں گا. جن کی وجہ سے رزق میں اتنی تنگی ہوتی ہے ۔کہ امیر سے امیر شخص بھی غریب ہو جاتا ہے۔
۔ عزیز خواتین وحضرات۔آج ہر بندہ پریشان ہے بے چین ہے.

پانچ ایسی باتیں ۔ حقوق اللہ اور حقوق العباد

یوں ہر لمحہ ادا س بھی ہے ،کیوں؟ ہمیں سب سے پہلے خود اپنے آپ سے یہ سوال کرنا چاہئے ۔
غور کیجئے صبح سے شام تک ہم کیا کرتے ؟24 گھنٹے کیسے گزارتے ہیں ؟ حقوق اللہ اور حقوق العباد کیسے اور کتنے ادا کرتے ہیں ؟ ۔ فجر کی نماز، تلاوت ، اذکار اور اس سے پہلے جاگتے اور جائے نماز پر آنے سے پہلے ہمارا رویہ چھوٹے بڑوں کے ساتھ کیسا ہوتا ہے ؟

پیار محبت سے دعاؤں کے ساتھ ایک  یا گھر ہی میں نماز پڑھنے کے بعد یگر معاملات میں اہل خانہ کے ساتھ کیسے تعاون کرکے مثال قا ئم کرتے ہیں . اسکا الٹ کرتے ہیں ؟ ہر آنے والا دن زندگی کا خالی نیا صفحہ ہوتا ہے.

جو ہمارے لیے ایک رحمت سے کم نہیں اسے ہم کیسے شروع کرتے ہیں. کیسے تمام دن میں بھرتے ہیں ؟ اس کا ہمیں پورا صحیح ادراک ہونا چاہئے ۔ ہماری نیک نیتی ہی ہمارے ہر کام کو آسان اور خوشگوار بنادیتی ہے ۔

محبت کا احساس زندگی

اہل خانہ کے ساتھ ہمدردی تعاون اور محبت کا احساس زندگی کو چار چاند لگا جاتا ہے خوشیاں جگمگانے لگتی ہیں ۔
ہر رشتہ اپنی جگہ مقدس ہے اہم ہے کیا ہم اسی اتنی اہمیت دیتے ہیں ؟ ا

یسا تو نہیں کہ ایرے غیرے اپنے بھائی اور سگا رحمی بھائی ہر جائی ! آپ کو معلوم ہے. نا کہ رسول اللہ ؐ نے فرمایا کہ جس گھر کے دروازے رشتے داروں کیلئے بند ہو۔

جس گھر میں رات دیر تک جاگنے اور صبح دیر تک اٹھنے کا رواج ہوجائے .تو وہاں رزق کی تنگی اور بے برکتی کو کوئی نہیں روک سکتا تو گویا ایسا کر کے ہم نے خود اپنے پاؤں پر کلہاڑی ماری۔ محنت اور محبت دونوں سی جی چرا کر بے برکتی کا شکار ہوگئے ۔

مہربان اور قدر دان

نہ ہمارے پیسے میں برکت ہے نہ وقت میں نہ خوشیوں میں ، ہم اپنے ہی سے ہر وقت ناراض اور اکھڑے ہوئے ہیں ۔ رزق تو بڑے وسیع
معنی رکھتا ہے جس کا ذمہ رب نے لیا ہوا ہے پس ہمیں یقین ہونا چاہئے اس کے رازق ہونے کا مہربان اور قدر دان ہونے کا البتہ ہمیں اپنا حق عبودیت کبھی نہیں بھولناچاہئے اپنا احتساب کرتے رہنا چاہئے ۔

کہ یہی عمل میری روح کا سکون اور میرے دل کا قرار ہے تو سمجھو کہ میرا بیڑا پار ہے ۔ زندگی میں ہر رشتہ کو اہمیت دیں انکا حق احسن طریقے سے ادا کریں جانے کب یہ عمل کی مہلت رک جائے اور ہمارا رزق تھم جائے ۔

ناظرین اکثر دیکھا گیا ہے کہ ہم رازق کو بھول جاتے ہیں اور روزی کے پیچھے لگ جاتے ہیں۔ اگر ہم روزی کو چھوڑ کر رازق کے پیچھے لگ جائیں تو روزی خود بخود آپ کے پیچھے ہوگئی رات دیر تک جاگتے رہنے اور صبح کو دیر سے بیدار ہونے کی خراب عادت اب ہماری طرز زندگی کا ایک اہم حصہ بن چکی ہے ۔

چھٹکارا حاصل

ہم کبھی یہ جاننے کی زحمت بھی نہیں کرتے کہ یہ بری عادت ہمیں کیا نقصانات پہنچا رہی ہے یا پھر اس عادت سے کیسے چھٹکارا حاصل کیا جا سکتا ہے تو آئیے آپ کو بتاتے ہیں کہ صبح جلدی کیسے اٹھا جاسکتا ہے ۔ اللہ پاک ہم سب کو صبح جلدی اٹھنے اور نماز ادا کرنے کی توفیق عطا فرمائے اور پیارے آقا کے فرمان پرعمل کرنے کی توفیق عطا فرمائے تاکہ ہماری روزی میں برکت پیدا ہوسکے ۔

Leave a Comment