اسلامک وظائف

سب سے بڑا اور اعلیٰ اور پکا ترین وظیفہ سید الوظائف

سید الوظائف آج کل مردوں میں بھی اور خاص طور سے خواتین میں وظیفوں کا بہت رواج چل پڑا ہے ، ہر چیز کا وظیفہ مانگتے ہیں ، تو سب سے بڑا اور اعلیٰ اور پکا ترین وظیفہ ’’ دعا‘‘ہے۔
کہ ہم دو رکعت نفل پڑھیں اور اللہ تعالیٰ سے خوب دعائیں مانگیں، اس وظیفے کو ہم روزانہ کریں اور تا حیات کرتے رہیں ، ان شاء اللہ ہماری مرادیں ضرور پوری ہوں گیں ۔ یہ سب سے بڑا وظیفہ ہے اس سے بڑا وظیفہ اور کوئی بھی نہیں۔ قرآن مجید میں اللہ تعالیٰ فرماتے ہیں: ’’ اُدْعُوْنِیْ اَسْتَجِبْ لَکُمْ ‘‘ مجھ سے مانگو! میں دوں گا۔(سورۃ المؤمن: 60) اللہ تعالیٰ نے یہ نہیں فرمایا کہ نیک مانگے گا تو دوں گا گناہ گار مانگے گا تو نہیں دوں گا ، بس فرمایا مانگو! میں دوں گا ۔

اب یہاں شیطان یہ شبہ ڈالتا ہے کہ بھئی تم تو گناہ گار ہو ، اللہ تعالیٰ تمہاری کہاں سنے گا؟ جو نیک لوگ ہیں ان سے دعاؤں کا کہو۔ نیک لوگوں کو دعا کا کہنا بہت اچھی بات ہے، لیکن ہم خود بھی خوب دعائیں کریں اور اپنی دعاؤں پر یقین بھی کریں ۔ کیونکہ اللہ رب العزت نے جب شیطان کو مردود قرار دیا تھا ، اس کے آدم علیہ السلام کو سجدہ سے انکار پر ، تو اس نے اللہ تعالیٰ سے دعا کی تھی کہ مجھے قیامت تک کی مہلت دی جائے۔ تو اللہ تعالیٰ نے اس غضب و ناراضگی کی حالت میں بھی اس کی دعا کو قبول فرما لیا تھا۔ تو جب ہم اللہ کے حضور نماز پڑھ کر دعا کریں گے ، تو ہمارا یہ عمل تو اللہ تعالیٰ کی رحمت کا باعث ہے، اللہ تعالیٰ ہماری دعائیں ضرور قبول فرمائیں گے ، بس یقین سے مانگتے رہیں۔

اللہ تعالی میری آپکی ہمارے والدین اور تمام امت کے مسلمانوں کی مغفرت فرمائے ، اللہ تعالی ہماری اور ہماری اولاد کی ہر قسم کے شر سے حفاظت فرمائے ، اللہ تعالی تمام مسلمانوں و غیر مسلموں کو ہدایت کے نور سے منور فرمائے، اللہ تعالی ہم سب کو پانچ وقت باجماعت نماز خوشووخزوع سے پڑھنے والا بنا دے ، اللہ تعالی ہمیں تہجد کی پابندی نصیب فرماکر کثرت سے اپنا ذکر کرنے والا محبوب بندہ بنا دے ، جناب محمد رسول اللہ صل اللہ علیہ وآلہ و بارک وسلم کے نقش کے قدم پر چلنے والا اور کثرت سے درود شریف پڑھنے والا بنادے آمین ثم آمین

دوستو اللہ سے مانگنا اور اللہ ہی سے مانگتے رہنا اللہ رب العزت کو بہت پسند ہے ، اللہ تعالی کی ذات ِعالی سے طلب کرنا اور صرف اللہ ہی کی ذات پر توکل کرنا اس بات کی دلیل اور اس عقیدہ اور یقین کی پختگی کی علامت ہے کہ جو کچھ بھی اس کاینات میں ہوتا ہے یہ ہو چکا ہے یا ہوگا صرف اور صرف ایک اللہ ہی کی مرضی سے ہوگا اللہ کی مرضی کے بغیر نا کچھ ہوا اور نہ ہوسکتا ہے ۔ درخت کا ایک پتہ بھی اللہ کے حکم کے بغیر نہیں ہلتا۔ نیکی کا م کرنے کی طاقت اور براءی سے بچنے کی قوت صرف اور صرف اللہ پاک ہی عطافرماتے ہیں ۔ بے شک اللہ رب العزت ہی ہم سب کے مالک ، خالق اور رازق ہیں۔ اللہ تعالی نے حضور نبی کریم صل اللہ علیہ وآلہ وسلم کو ہم سب کیلے خاتم النبین بنا کر بھیجا ۔ آپ صل اللہ علیہ وسلم کے نقش قدم پر چلنے ہی میں دنیا و آخرت کی فلاح ہے اور غیروں کے طریقے پر چلنا ناکامی ہی ناکامی ہے ۔

Leave a Comment