قصص الانبیا ء

حضرت یونس علیہ سلام کی دعا کی فضیلت

حضرت یونس علیہ سلام

حضرت یونس علیہ سلام کی دعا کیا تھی؟

حضرت یونس علیہ سلام : اللہ تعالی نے اپنے بندوں پر بڑا احسان فرمایا ہے کہ۔  ہمیں ہر مشکل کی گھڑی میں قرآن اور سنت کے ذریعے دعائیں سکھا دی ہیں۔ اگر قرآن پاک میں موجود انبیاء کے تذکرہ پر غور کریں ۔ تو یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ جب بھی انبیاء کرام پر کوئی آزمائش آتی ۔ تو وہ اللہ تعالی کے سامنے اپنی کمزوری کا اظہار کرتے اور اللہ تعالی سے مدد مانگتے۔

اس طرح جب حضرت یونس علیہ سلام اپنی کی ہوئ غلطی کی وجہ سے مچھلی کے پیٹ میں پہنچ گئے تو آپ نے اللہ تعالی کے سامنے اپنی غلطی کا اعتراف کیا اور اللہ تعالی کی ذات کی پاکی بیان کی۔ آپ کی دعا کے الفاظ یوں ہیں۔
کوئ معبود نہیں تیرے سوا، تو پاک ہے، بے شک میں ہی ظالموں میں سے ہوں۔

مچھلی کا باہر اگلنا

حضرت یونس علیہ سلام کی ایک غلطی ان کو اندھیروں میں لے گئ۔ آپ رات کے اندھیرے میں سمندر کی تاریک گہرائیوں میں موجود مچھلی کے پیٹ کے اندھیرےمیں تھے۔ اتنی تاریکیوں میں آپ علیہ سلام نے اللہ کوپکارا اور اللہ کی پاکی بیان کی اور اپنی غلطی کا اعتراف کیا۔ جب بھی بندہ شیطان کی طرح اپنی غلطیوں پر اترانے کی بجائے حضرت آدم علیہ سلام کی طرح اپنی غلطی کو تسلیم کرتا ہے اور اس پر شرمندہ ہوتا ہے۔

تو اللہ تعالی پھر اپنے بندے کو تھام لیتے ہیں اور اس کی توبہ قبول کرتے ہیں۔ حضرت یونس علیہ سلام کی اس دعا کی فضیلت سے آپ کو اللہ تعالی نے اتنے اندھیروں سے نجات دی۔ ایک روایت میں آتا ہے کہ اگر حضرت یونس علیہ سلام یہ ذکر نہ کرتے تو قیامت تک مچھلی کے پیٹ میں رہتے۔ اس دعا کی وجہ سے اللہ تعالی نے مچھلی کو حکم دیا کہ وہ آپ کو باہر اگل دے۔ مچھلی نے آپ کو سمندر کے کنارے پر اگل دیا۔

کدو کی بیل

جب آپ علیہ سلام مچھلی کے پیٹ سے باہر نکلے۔  تو آپ کی حالت بالکل ایک نوزائیدہ بچے کی طرح تھی۔ آپ نہایت نحیف اور کمزور تھے۔ اللہ تعالی نے آپ کے گرد کدو کی بیل اگائ۔ اس بیل کے پتے گھنے اور بڑے ہونے کی وجہ سے آپ پر سایہ کرتے اور اس کے بیج اور پھل کو آپ غذا کے طور پر استعمال کرتے۔ کدو کی بیل کی وجہ سے مکھیاں وغیرہ بھی آپ کے قریب نہ آتیں۔

ایک بکری سارہ دن پہاڑوں پر چڑنے بعد آپ کے پاس آ جاتی۔  تو آپ دودھ پی لیتے۔ اس دعا کی فضیلت یہ تھی کہ آپ کو آپ کی کھوئ ہوئ صحت بھی واپس مل گئ۔ اور اللہ تعالی نے آپ کو ایک اور بستی کی طرف دعوت حق کے لیے بھیجا اور وہ بستی پھر آپ پر ایمان بھی لے آئ۔
اگر ہم بھی جب غموں کے اندھیروں میں ہوں اور اس دعا کو اپنا معمول بنا لیں تو اللہ تعالی ہمیں بغیر کسی نقصان کے اللہ تعالی ہمیں اس غم سے نجات دی دیں گے۔ ان شآ اللہ

Leave a Comment