قصص الانبیا ء

حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہا کی سیرتِ طیبہ

.حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہا

ام المومنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہ کے والد حضرت ابوبکر صدیق رضی اللہ تعالی عنہا ہے.

آپ رضی اللہ عنہ کی والدہ کا نام حضرت عمر معن رضی اللہ تعالی عنہ ہیں.  ان رضی اللہ تعالی عنہ کی کنیت ام عبداللہ ہے اعلان نبوت کے چوتھے سال حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہ مکہ مکرمہ میں پیدا ہوئیں .آپ رضی اللہ تعالی عنہا کو یہ سعادت حاصل ہے. کہ آپ رضی اللہ تعالی عنہ نے ایک .مسلمان گھرانے میں آنکھ کھولی .آپ رضی اللہ تعالی عنہ فرماتی ہیں .جب میں نے اپنے والدین کو پہچاننا شروع کیا. تو وہ مسلمان ہو چکے تھے
بچپن میں محلے کی لڑکیاں حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہا کے پاس جمع رہتی ہو. اور وہ اپنے اللہ تعالی عنہا کے ساتھ کھیلا کرتی تھی. گڑیا کے ساتھ کھیلنا اور دل ہلا اللہ تعالیٰ عنہا کو بہت پسند تھا.

ہجرت سے پہلے مکہ مکرمہ میں حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہ ان رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے ہوا. اور رخصتی ہجرت کے بعد مدینہ منورہ میں ہوئی .

مثالی زندگی

حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہ کے سفر میں رخصت ہوکر آئی تھی. وہ کوئی عالیشان عمارت نہ تھی بنی نجار کے محلے میں مسجد نبوی صلی اللہ علیہ وسلم کے چاروں طرف چھوٹے چھوٹے متحدہ تھے. ان میں سے ایک حجرے میں رہتی ہیں .حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہ نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ نہایت مثالی زندگی گزاریں
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی تعلیم و ارشاد کی مجلس روزانہ مسجد نبوی میں منعقد ہوئے. پھر بھی جو آپ رضی اللہ تعالی عنہا سے بالکل مختلف تھی اس گھر سے باہر بھی لوگوں کو درس دیتے تھے.

علمی برتری اور فوقیت

وہ اس میں شریک رہتی ہیں .اگر کبھی دوری کی وجہ سے کوئی بات سمجھ میں نہ آتی .تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم گھر تشریف لاتے ۔تو دوبارہ پوچھ آپ رضی اللہ عنہ میں سب سے زیادہ احادیث آپ رضی اللہ تعالی عنہ سے روایت ہے .اور بے شمار صحابہ کرام رضی اللہ عنہ پر علمی برتری اور فوقیت رکھتی .حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہا کا اخلاق نہایت بلند تھا وہ نہایت سنجیدہ فیاض عبادت گزار اور رحمدل تھی غربت اور بد گوئی سے بچتی ہیں اس شجاعت اور بہادری کی صفات میں بے مثل تھے چنانچہ غزوہ احد میں جب مسلمانوں میں افتراق برپا تھا.مشکلات کا خوف اور حیثیت رکھتی تھیں .حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ تعالی عنہ نے 17 رمضان 58 ہجری کو رات کے وقت وفات پائی

Leave a Comment