اسلامک معلومات

ایک مسلمان کی زندگی میں دعا کی اہمیت

ایک مسلمان کی زندگی میں دعا کی اہمیت

ایک مسلمان کی زندگی میں دعا کی اہمیت

اللہ تعالیٰ کی بارگاہ میں دعا مانگنا اعلیٰ درجے کی عبادت ہے۔ نبی اکرم ﷺ نے اسے عبادت کی روح قرار دیا ہے۔ جب کوئی بندہ انتہائی عاجزی اور انکساری سے اللہ تعالیٰ کی بارگاہ میں اپنی حاجات پیش کرتا ہے اور اسی کو حاجت روا اور
کارساز سمجھتا ہے،تو اللہ تعالیٰ خوش ہوتا ہے کیونکہ اللہ تعالیٰ اپنے بندوں سے بے حد پیار کرتا ہے۔ اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے:” اور تمہارے پروردگار نے ارشاد فرمایا ہے.

کہ تم مجھ سے دعا کرو میں تمہاری (دعا) قبول کروں گا۔”نبی اکرم ﷺ اکثر اللہ تعالیٰ کی بارگاہ میں ھاتھ پھیلا کر دعا مانگا کرتے تھے ۔ سب سے پہلے اللہ تعالیٰ کی تسبیح بیان کرتے.

اس کی حمدوثنا کرتے ،اس کی رحمتوں اور نعمتوں کا شکر بجا لاتے اور سب سے آخر میں اپنی خواہش کا اظہار کیا کرتے تھے۔ صحابہ کرامؓ
اور اولیاء عظامؒ کا بھی یہی طریقہ رہا ہے۔

اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے:

“اور (اے پغمبر )جب تم سے میرے بندے میرے بارے میں دریافت کریں تو (کہہ دو کہ) میں تو (تمہارے ) پاس ہوں ۔جب کوئی پکارنے والا مجھے پکارتا ہے تو میں اس کی دعا قبول کرتا ہوں۔”
اللہ تعالیٰ اسی کائنات کا خالق و مالک ہے۔وہ ہر چیز پر قادر ہے۔ تمام مخلوق اسی کی محتاج ہے۔ اس کی مرضی کے بغیر ایک پتا بھی حرکت نہیں کر سکتا۔ ہر مشکل میں اللہ تعالیٰ کو ہی پکارنا چاہیے۔

2۔ دعا کی فضیلت:

نبی اکرمﷺ نے دعا کی فضیلت بیان کرتے ہوئے اسے مومن کا ہتھیار قرار دیا ہے۔قرآن مجید میں بہت سے انبیاء کرام کی دعاؤں کا ذکر ہے۔جن میں حضرت آدم ؑ’، حضرت نوح ؑ، اور حضرت موسیٰ ؑ،حضرت ابراہیم ؑ، کی دعائیں خاص طور پر قابلِ
ذکر ہیں۔ حضور اکرم ﷺ خود بھی یہ دعا کثرت سے مانگا کرتے تھے: “اے ہمارے پروردگار! ہم کو دنیا میں بھی نعمت عطا فرما اور آخرت میں نعمت عطا فرما اور دوزخ کے عذاب سے محفوظ رکھ۔۔”

2۔ دعا کے آداب:

اللہ تعالیٰ کی بارگاہ میں دعا مانگنے کے آداب درج ذیل ہیں:
1۔ بہتر ہے کہ دعا با وضو ہو کر مانگی جائے۔
2۔ دعا قبلہ رخ ہو کر مانگی جائے۔
3۔ دعا کے وقت ہتھیلوں کا رخ چہرے کی جانب ہو اور دعا کے بعد چہرے پر ہاتھ پھیر لئے جائیں۔
4۔ دعا میں سب سے پہلے اللہ تعالیٰ کی خوب حمدو ثنا بیان کی جائے۔پھر نبی اکرم ﷺ پر درودوسلام پڑھا جائے۔ اس کے بعد اپنے لئے دعا مانگی جائے۔
5۔ دعا کرتے وقت پورا دھیان اللہ تعالیٰ کی طرف رہے۔

Leave a Comment