اسلامک وظائف

اپنے اہل وعیال کیلئے خصوصی دعا

اپنے اہل وعیال

اپنے اہل وعیال کیلئے خصوصی دعا

اپنے اہل وعیال کیلئے خصوصی دعا۔ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے بھی نہ صرف اللہ تعالیٰ سے دعا کرنے کی ترغیب دی ہے۔ بلکہ اس کے فضائل اور آداب بھی بیان فرمائے ہیں۔ چنانچہ حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: اللہ کے یہاں دعا سے زیادہ کوئی عمل عزیز نہیں ہے۔ یعنی انسانوں کے اعمال میں دُعا ہی کو اللہ تعالیٰ کی رحمت وعنایت کوکھینچنے کی سب سے زیادہ طاقت ہے۔ (ابن ماجہ ۔ باب فضَل الدُعاء)

حضرت عبد اللہ بن عمر رضی اللہ عنہما سے روایت ہے ۔کہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: تم میں سے جس کے لئے دُعا کا دروازہ کھل گیا اس کے لئے رحمت کے دروازے کھل گئے ۔اور اللہ کو سب سے زیادہ محبوب یہ ہے کہ بندہ اس سے عافیت کی دُعا کرے۔(ترمذی)
حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے دُعا کومؤمن کا خاص ہتھیار یعنی اس کی طاقت بتایا ہے۔ (الدُّعَاءُ سِلاحُ الْمُوْمِنِ) (رواہ ابویعلی وغیرہ)۔ دُعا کو ہتھیار سے تشبیہ دینے کی خاص حکمت یہی ہوسکتی ہے ۔کہ جس طرح ہتھیار دشمن کے حملہ وغیرہ سے بچاؤ کا ذریعہ ہے۔ اسی طرح دعا بھی آفات سے حفاظت کا ذریعہ ہے۔

اس دعا کے فائدے

آج کی یہ قرآنی دعا اللہ کے نیک اور پسندیدہ بندوں کی دعا ہے ۔۔۔جو بندے نیک ہوتے ہیں انہیں اپنی ازواج و اولادکی دینداری کی بھی فکر رہتی ہے وہ جہاں ان کے کھانے پینے کا فکر کرتے ہیں وہاں انہیں دین سکھانے اور ان کی دینی تربیت کا بھی اہتمام کرتے ہیں اگر بیوی بچے جسمانی اعتبار سے صحت مند ہوں اور انہیں کھانے پینے کو خوب ملتا ہو اور اللہ تعالیٰ کے اور ماں باپ کے نا فرماں ہوں تو آنکھوں کی ٹھنڈک نہیں بنتے بلکہ و بال بن جاتے ہیں۔

جب اولاد کو دین پر ڈالیں گے اور انہیں متقی بنائیں گے اور زندگی بھر انہیں دین پر چلاتے رہیں گے تو ظاہر ہے کہ اس طرح متقیوں کے امام اور پیشوا بنے رہیں گے۔۔۔۔کیونکہ ایک مومن کی آنکھ محض بیوی بچوں کے ظاہری حسن و جمال اور عیش و آرام سے نہیں بلکہ دراصل ان کی نیکی اور پاکیزہ اخلاق سے ٹھنڈی ہوتی ہے ۔

رَبَّنَا هَبْ لَنَا مِنْ اَزْوَاجِنَا وَذُرِّيّٰتِنَا قُرَّةَ اَعْيُنٍ وَّاجْعَلْنَا لِلْمُتَّقِيْنَ اِمَامًا
یعنی اے ہمارے رب۔۔۔ ہمیں اپنی بیویوں اور اولاد سے آنکھوں کی ٹھنڈک عنایت فرما اور ہمیں پرہیزگاروں کا سردار بنا۔۔

محترم ناظرین ِکرام۔۔۔۔ جس کی اولاد یا بیوی نافرمان ہے اس کے لیے زندگی ایک عذاب ہے ۔ بہرحال نافرمانی سے اللہ ہماری حفاظت فرمائے۔۔۔۔۔۔آپ اس قرآنی دعا کو اپنی نماز میں بھی پڑھ سکتے ہیں۔۔ اور صبح شام کے وظائف میں بھی شامل کر سکتے ہیں۔ کیونکہاس قرآنی دعا کے پڑھنے سے گھر میں سکون اور سلامتی کی فضا اللہ کے حکم سے قائم و دائم رہیں گی۔۔۔ اور اولاد بھی نافرمانی سے محفوظ رہے گی۔۔۔اللہ پاک ہمیں اس قرآنی دعا کو پڑھنے والا بنائے اور ہمارے اہل و عیال کو ہماری آنکھوں کی ٹھنڈک بنائے ۔۔۔۔آمین

Leave a Comment