اسلامک معلومات

اولاد اور والدین کے حقوق و فرائض

ماں باپ کے لیے اولاد ایک بہت بڑی نعمت ہے-جو لوگ اس نعمت سے محروم ہوتے ہیں ان کو اولاد کی اہمیت زیادہ پتا ہوتی ہے-بچپن میں ماں باپ اولاد کا سہارا ہوتے ہیں اور جوانوں میں اولاد ماں باپ کا سہارا بنتی ہے-ماں باپ کو اپنی اولاد سے زیادہ کوئی چیز عزیز نہیں ہوتی-اللہ کے بعد ماں باپ کی محبت ہے جو بے غرض ہوتی اور شدید ہوتی ہے-

اولاد جیسی بھی ہو چاہے نافرمان ہو لیکن ماں باپ کو وہ پھر بھی عزیز ہوتی ہے-اللہ تعالی نے اولاد کو ماں باپ کے لیے سکون کا باعث بنایا ہے-لیکن یہی اولاد ماں باپ کی تباہی کا سبب بھی بنتی ہے-ماں باپ اپنی اولاد کے لیے کچھ بھی کر جاتے ہیں یہاں تک غلط کام بھی-اللہ تعالی نے ان دونوں کے حقوق و فرائض مقرر کر رکھے ہیں اور جو بھی اس سے انکار کرے گا یا اس میں کوتاہی برتے گا تو اللہ تعالی کی پکڑ ویسے ہی بہت سخت ہے-اولاد کے حقوق: ماں باپ کا فرض ہے کہ اپنی اولاد سے حسن سلوک کرے-اولاد کا حق ہے کہ اسے ایک اچھا نام دیا جائے اور اس کا عقیقہ کیا جائے- اولاد کا حق ہے کہ جب کوئی مناسب رشتہ آئے تو اس کی شادی کر دی جائے-

اولاد کا حق ہے کہ اس کی اچھی پرورش کی جائے اور اس کو اچھی تعلیم دلوائی جائے-اولاد کا حق ہے کہ اس کی عام ضروریات پوری کی جائیں-والدین کے حقوق: اولاد پر فرض ہے کہ ماں باپ کے ساتھ حسن سلوک سے پیش آئے-اولاد کو ماں باپ سے نرمی سے بات کرنی چاہیے اور ان سے بلند آواز میں بات نا کی جائے-والدین کا حق ہے کہ ان کی فرمابرداری کی جائے اور ان کی ہر جائز بات کو مانا جائے- اولاد کا فرض ہے کہ ماں باپ کا شکر ادا کیا جائے-چونکہ ماں باپ ہمارے لیے بہت کچھ کرتے ہیں اور ہماری خواہشات پوری کرتے ہیں اسی لیے ان کی شکر گزاری کرتے رہنا چاہیے-

ماں باپ کا حق ہے کہ ن کے کام میں ان کی مدد کرائی جائے-اللہ نے ہمیں ان کی پریشانیاں کم کرنے کے لیے بھیجا ہے نا کہ بڑھانے کے لیے-ماں باپ کا حق ہے کہ جب وہ وفات پا جائیں تو ان کے لیے مغفرت کی دعا کی جائے-جب وہ حیات ہوں تب بھی ان کے دعا کرتے رہنا چاہیے-اللہ تعالی نے ماں باپ کو بہت بلند مقام عطا کیا ہے-ہمیں ان کے سامنے اف تک کرنے سے منع فرمایا گیا ہے-اور ان کے شکر گزار ہونے کا حکم بھی ہے-

Leave a Comment