قصص الانبیا ء

اولاد اور رزق کے لئے قرآنی دعا

اولاد اور رزق

اولاد اور رزق کے لئے قرآنی دعا

 

اولاد اور رزق کے لئے قرآنی دعا۔

دوستو۔۔۔۔ہم لوگ رزق صرف کھانے کی چیزوں کو کہتے ہیں. حالاں کہ ایسا نہیں ہے.

بل کہ رزق اللہ تعالٰی کی دی ہوئی ہر نعمت کو کہتے ہیں.

چاہے وہ صحت ہو، علم ہو، اخلاق ہو، عمل ہو، نیک بیوی اور اولاد ہو.

مال ہو، دلی اطمینان ہو، یا پھر امن کی نعمت ہو۔ اللہ تعالٰی کی بے شمار نعمتوں میں سے ہر نعمت پر رزق کا اطلاق ہوتا ہے۔ اللہ تعالٰی کا ارشاد ہےکہ اگر تم اللہ کی نعمتوں کو گننے لگو، تو اْنہیں شمار نہیں کرسکتے۔

یہ بات توہمیشہ ذہن میں رہنی چاہیئے کہ کسی کے رزق کی وسعت کبھی انسان کوروزی کی وسعت کے ذریعے آزماتاہے.

اوربے انتہامال اس کے اختیار میں دے دیتا ہے اورکبھی معیشت کی تنگی کی وجہ سے اس کے صبراستقامت اور پامردی کاامتحان لیناچاہتا ہے اوراس سے ان صفات کو پروان چڑھاتاہے۔
کبھی تو ایسا ہوتاہے کہ مال و دولت کی فراوانی صاحبان مال کے لیے وبال جان بن جاتی ہے .

ان سے ہرقسم کاسکھ اور چین چھین لیتی ہے.جب انسان گناہ کا ارتکاب کرتا ہے تو ذاتِ الٰہی اسے گوناگوں عذاب میں مبتلا کر کے انتقام لیتی ہے۔ کبھی بارش نہیں ہوتی اور قحط سالی کے آثار رونما ہو جاتے ہیں۔ کبھی ہری بھری کھیتیاں پانی کو ترستی ہوئی گل سڑ جاتی ہیں۔

 

اولاد جیسی نعمتِ

کبھی اولاد جیسی نعمتِ عظمیٰ کو انسان کی آنکھیں ترستی ہیں اور کبھی تنگیٔ رزق سے انسان اس قدر مغلوب ہو جاتا ہے کہ اس کے ایمان کو خطرہ لاحق ہو جاتا ہے ان تمام امراض کا علاج اسی استغفار میں مضمر ہے۔ یہ ایک ایسا نسخہ ہے کہ اس کے استعمال سے بیسیوں اولاد کے طلب گاروں کو اولاد نصیب ہوئی، سینکڑوں رزق کے متلاشیوں کو رزق نصیب ہوا۔ اور ان گنت اور لا تعداد کھیتی اور پھلوں کی کمی کا شکوہ کرنے والوں کو وافر اناج اور فروٹ نصیب ہوا۔
رَبَّنَا تَقَبَّلْ مِنَّا اِنَّکَ اَنْتَ السَّمِیْعُ الْعَلِیْمُoوَتُبْ عَلَیْنَا اِنَّکَ اَنْتَ التَّوَّابُ الرَّحِیْمُ
یعنی اے ہمارے رب ہم سے قبول کر، بے شک تو ہی سننے والا جاننے والا ہے۔

اور ہماری توبہ قبول فرما، بے شک تو بڑا توبہ قبول کرنے والا نہایت رحم والا ہے۔
آپ ﷺ نے فرمایا اﷲ تعالیٰ نے میری اُمت کے لیے مجھ پر دو امانیں نازل فرمائی ہیں.

ایک یہ کہ ان لوگوں پر عذاب نہیں کرے گا جب تک آپ ﷺ ان میں موجود ہیں اور ان پر عذاب نہیں اُتارے گا .

جب کہ یہ لوگ توبہ و استغفار کررہے ہوں گے۔

اور جب میں اس دُنیا سے رخصت ہوجاؤں گا .

تو پھر ان میں قیامت کے دن تک استغفار باقی رہ جائے گا ۔ لہذا اللہ پاک ہمیں بھی اس قرآنی دعا کو پڑھنے والا بنائے اور اولاد اور رزق میں وسعتیں عطا فرمائے۔۔۔۔آمین ۔۔۔۔السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ۔۔۔۔

Leave a Comment