اسلامک معلومات

انسان اپنے آپ کو پہچان .

اللہ نے ہر ایک انسان میں خوبی خرابی ودیعت کی ہیں ۔ حق اور باطل کی پہچان میں سب سے بڑی رکاوٹ ۔ انسان کا تکبر کرنا تعصب کرنا ھے ۔ تکبر کی وجہ سے تعصب پیدا ہوتا ھے ۔ تعصبی انسان سے کبھی عدل و انصاف نہیں ہو سکتا ۔ سواۓ فتنہ فساد ۔ ظلم و بر بریت کے ۔ تعصب وہ ظلمت ھے ۔ جیسے کوئ نابینا راہ چلتے راستہ کو ٹٹولتا رہتا ھے ۔ اسلیۓ جولوگ چاہتے ہیں کہ اسے ۔ اللہ نور علم سے نوازے ۔ تو اللہ کے حضور سچی پکی توبہ کریں ۔ اسلیۓ کہ تکبر تعصب وہ قفل ھے ۔ جو انسان کو صراط مستقیم سے بہت دور کردیتا ھے ۔

اسلیۓ قلب کو تکبر تعصب سے پاک کریں ۔ جیسے صحابہ کرام رضی اللہ عنھم نے کیا تھا ۔ سلامتی کے راستے میں داخل ہونے کے بعد ۔ اپنے آباؤ اجداد کے حسب نسب خاندان برادریوں مسلک و مذھب قوم و ملت کے ہر طرح کے لیبل Label کو کھروچ کر پھینک دیا تھا ۔ خالص اللہ کے رنگ میں رنگ گۓ تھے ۔ مہاجرین انصار ۔ کمزور طاقت ور مل کر ۔ صرف ایک ملت ابراھیم پڑ کھرے ہو کر ۔ اپنی اپنی خوبیوں سے پہچانے گۓ ۔ صداقت سے عدل و انصاف کرنے سے رحمدلی ہمدردی کی وجہ سے سخاوت و فیاضی بہادر نڈر کی وجہ سے ۔ ڈر صرف اللہ کا رکھتے تھے ۔ دوستی صرف اللہ کیلیۓ دشمنی صرف اللہ کیلیۓ ۔ ذاتی کوئ اغراض نہیں ہوتی تھی ۔ اسلیۓ آسمانی دنیا سے اللہ پاک کا پاک کلام ۔ پاک روح ۔ یعنی روح الامین کے ذریعہ ۔ زمینی دنیا میں صادق الامین مخبر صادق ﷺ‎ کے قلب اطہر پہ نازل ہوآ ۔ اسلیۓ کلام اللہ کے اثرات رہتی دنیا تک ۔ ہر طرح کے شر سے پاک قلب ۔ یعنی ذمہ دار امین مصلحین مومنین کے قلب پر اسکے اثر مرتب ہوتے رہینگے ( سورہ واقعہ آیت 77 . 78 . 79 کا مطالعہ کریں ۔ اسی پیج کو کھول کر ) صحابہ کرام رضی اللہ عنھم کے مطعلق یہ نظم ( شریعت کے احکام تھے وہ گوارہ ۔ کہ شیدا تھے ان پر یہود و نصارا ۔۔ گواہ ان کی نرمی کا قرآں ھے سارا ۔ خود الدین و یسرن نبی نے پکارا ) مسدس حالی

Leave a Comment