اسلامک وظائف

اللہ الصمد کی کیسی کیسی برکات ہیں

اللہ بے نیاز ہے، اللہ کی شان، بے نیازی، صفات، صمدیت یعنی اللہ پر بھروسے کی مظہرہے۔ جو شخص اللہ کو اس کی صفت سے پکارتا ہے وہ اس کا مظہر ہو جاتا ہے لہٰذا جو شخص اللہ کے مقرب بندوں میں شامل ہونا چاہتا ہے وہ اسے کثرت کے ساتھ پڑھا کرے۔

اللہ الصمد پڑھنے کی برکات

اللہ الصمد پڑھنے سے اللہ پاک انسان کی کیسے مدد کرتے ہیں؟ اللہ الصمد کے ورد سے عام لوگوں کو بھی بے شمار فیوض و برکات حاصل ہوتے ہیں۔ جو شخص یہ چاہے کہ اس کے کاروبار میں خیر و برکت ہو اور رزق میں وسعت ہو تو وہ روزانہ ایک ہزار مرتبہ اللہ صمد پڑھے انشاءاللہ دنیاوی دولت حاصل ہو گی اور کبھی خالی جیب نہیں رہے گی۔ اگر کوئی دنیا کے مکر و فریب اور دھوکے میں مبتلا ہو اور اسے چھٹکارا پا کر سکونِ قلب چاہتا ہو تو اسے جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب میں ساری رات ہی پڑھے عجیب فرحت اور سکون محسوس کرے گا انشاء اللہ۔ ہر نماز کے بعد جو شخص 35 مرتبہ پڑھے وہ اجر عظیم پائے گا، دنیا اس سے پیار کرنے لگے گی ،جو شخص تہجد کے وقت پانچ سو مرتبہ پڑھتا ہے وہ دین و دنیا میں سکون اور راحت پائے گا، پریشانیاں اس سے دور رہیں گی اور اگر کوئی شخص ایک کروڑ مرتبہ کر لے تو جو اللہ سے مانگنے گا وہی پائے گا ۔اگر کسی بچے کو سبق یاد نہ ہوتا ہو تو یہ آیت سات مرتبہ پڑھ کر پانی پر دم کرے اور 41 دن ایسے ہی دم کر کے اسے پلاتے رہیں انشاءاللہ وہ پڑھائی کی طرف راغب ہو گا اور جلد ہی اسے سبق یاد ہونا شروع ہو جائے۔

اللہ الصمد اور انمول خزانہ کی کرامات

ایک بہن کہتی ہیں کہ میں کھاریاں شہر میں لیڈی ہیلتھ ورکر ہوں۔ ایک دفعہ میں کھاریاں کے ساتھ واقع ایک گاؤں میں بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے گئی،ایک خاتون نے مجھے باتوں باتوں میں اپنی زندگی کا ایک سچا واقعہ بتایا جس کی میں نے گاؤں میں موجود کئی خواتین سے تصدیق بھی کی۔اس عورت نے کہا کہ باجی میرا میاں باہر کے ملک میں تھا کمپنی نے میرے میاں کے 12 لاکھ روپے لیے تھے کہ اچانک اور ان کے بیچ جھگڑا ہو گیا اور انہوں نے میرے میاں کو واپس پاکستان بھجوا دیا۔ اس وقت ان کے پاس تقریبا 30 ہزار روپے تھے جبکہ پچھلے چھ ماہ سے انہیں تنخوا بھی نہیں ملی تھی۔گھر آئے تو میں نے پچھلے چھ ماہ سے قرضا لے لے کر کاغذ کالے کیے ہوئے تھے جب میں نے پیسے مانگے تو ناراض ہونے لگے کہ میرے پاس صرف 30 ہزار روپے ہے اور قرض ہم نے 60 ہزار لیا ہے میں کہاں سے دوں گا ۔جھگڑا اتنا بڑھ گیا کہ بات علیحدگی تک پہنچ گئی۔ کسی بزرگ نے مجھے یہ وظیفہ دیا کہ سا کلو گندم کے ہر دانے پر اللہ الصمد پڑھیں اور پھر نہر میں گرا دیں۔آپ یقین جانیے کہ صرف ایک دن دانے پھینکے دوسرے دن کمپنی والوں نے 12 لاکھ روپے کا چیک انہیں بھیج دیا۔ امید تو دور کی بات ہے کبھی سوچا بھی نہیں تھا کہ پیسے مل جائیں گے۔
وہ بہن کہتی ہیں کہ چونکہ میں لیڈی ہیلتھ ورکیرہوں، گھر گھر کا ہر فرد مجھ پر اعتماد کرتا ہے۔ ایک دفعہ ویکسینیٹر ٹیکے لگانے آیا تھا، میں گھر میں بچے کو بلانے گئی کہ اس کی ماں بچے کو حفاظتی ٹیکے لگوا لے۔ معلوم ہوا کہ ماں تو گھر پر نہیں ہے ، پوچھنے پر پتہ چلا کہ وہ گھر والوں سے روٹھ کر ہمسائے کے گھر گئی ہے، پانچ دن کی بیٹی تھی اور دوسری ڈھیڑ سال کی، گھر میں ساس اور ان کے بیٹے بیٹھے ہوئے تھے ، میں ہمسائے کے گھر گئی سردی کا موسم تھا وہ عورت اپنی بچیوں کو لے کر لیٹی ہوئی تھی، جہاں وہ عورت لیٹی ہوئی تھی بتاتی چلوں کہ ان کا ایک ہی کمرہ تھا ،نہ کچن تھا، نہ باتھ، نہ برآمدہ ، جب میں نے وجہ پوچھی تو کہنے لگی کہ بچی بیمار تھی میرے پاس پیسے نہیں تھے میں کسی سے پیسے ادھار لے کر دوائی لائی تو خاوند آکر ناراض ہوا اور بات بڑھتے بڑھتے لڑائی جھگڑے تک پہنچ گئی۔ اب میں نے ادھر نہیں رہنا اپنے میکے جاؤں گی۔ گھر والے کہنے لگے کہ ہم نے اس کو کہا تھا کہ ہم تمہیں تمہارے والدین کے گھر چھوڑ آتے ہیں مگر اس نے انکار کر دیا ۔مجھے کچھ سمجھ نہیں آرہا تھا کہ کیا پڑھوں اور یہ مان جائے، میں نے دل ہی دل میں درود شریف پڑھ کر خزانہ نمبر 2 پڑھا ۔پڑھ کر اس عورت پر پھونکنا شروع کر دیا ۔تقریباً 21 بار پڑھا ہوگا اور غیر محسوس طریقے سے تین پھونکیں مار دیں۔ آپ یقین جانیے کہ پتہ نہیں مجھے کیوں اتنا یقین تھا کہ یہ مان جائے گی۔میں نے اسے چلنے کو کہا ،ایک بچی اس نے اٹھائی ،ایک اس نے اور اسی کے گھر چھوڑ آئی۔ اس کے خاوند اور ساس کو سمجھایا کہ ابھی کچھ نہ کہنا کم از کم میری لاج رکھنا۔ بعد میں پتہ چلا کہ اس کے ہمسائے ناراض ہوگئے تھے کہ ہماری بات نہ مانی اورپرائی باجی کی بات مان لی ۔

یہ خود میرا اپنا واقعہ ہے جو میاں بیوی نے انمول خزانے کی وجہ سے صلہ ہوئی۔ اسی طرح ایک اور واقعہ میرے ایک ساتھی کا ہے۔ اس نے میرے ذریعے ایجنٹ کے پاس اپنے میاں کا کیس جمع کروایا تھا کہ وہ بیرون ملک جا سکے۔ مجھ سے تقریباً 20 ہزار روپے دلوائے تھے ۔کئی ماہ گزر جانے کے بعد اس کا کام نہیں بنا، میں خود پریشان ہو گئی تھی کہ نہ کام بنانہ پیسے واپس ملے۔ کافی دن سوچ بچار کے بعد میں نے اس سے اللہ الصمد روزانہ 1000 بار پڑھنے کو کہا میں خود بھی روزانہ ایک ہزار بار اللہ الصمد کا ذکر کررہی تھی ۔یقین جانیے کے 21 دن نہیں گزرے تھے کہ ایجنٹ میرے گھر آکر پیسے واپس کر گیا اور اللہ کے نام کی برکت سے مجھے رسوائی سے بچا لیا ۔
بلڈکینسر سے یقینی نجات

قاری یونس صاحب میرے بھائی کے دوست لاہور صدر میں ایک مسجد میں خطیب اور امام ہیں۔ڈیڑھ سال قبل ان کے جو ان بھائی کو بلڈ کینسر ہو گیا ،مریض آخری اسٹیج پر تھا ،لاہور اور اسلام آباد کے تمام بڑے ہسپتالوں نے انہیں لاعلاج قرار دیا تھا مگر قاری صاحب نے ہمت نہیں ہاری، بڑے بڑے علماء کرام کی خدمت میں اپنے بھائی کو لے کر جاتے دعا کرواتے اور دم کراتے۔نیک اللہ والوں کی دعاؤں سے مختلف دیسی علاج کرواتے ہوئے کچھ افاقہ ہوا ۔پھر ڈاکٹر سے رجوع کیا ڈاکٹر نے 20 لاکھ آپریشن کا مانگا ۔قاری صاحب انتہائی درویش صفت اور سفید پوش انسان تھے اتنا پیسہ ان کے بس سے باہر تھا مگر ہر لمحہ انہوں نے اللہ ہی سے مانگا بالکل بھکاری بن کر۔ اللہ تعالیٰ نے غیب سے ان کی مدد کی اور پھر کامیاب آپریشن اور کامیاب علاج کے بعد آج الحمدللہ وہ صحت مند ہیں اور یہ ساری کرامات اللہ صمد وضیفے کی ہیں۔ انہوں نے سوا کروڑ دفعہ یہ وظیفہ پڑھا۔ وہ بہن کہتی ہیں میں اس واقعے کی چشم دید گواہ ہوں۔
اللہ صمد کے کمالات

میرے دوست شیرازی بشارت نے انہیں یہ وظیفہ بیٹے کے لیے دیا اور اللہ تعالیٰ نے انہیں بیٹے کی نعمت سے نوازا۔ 14سال میں میرے سامنے انہوں نے جس عورت کو بھی یہ وظیفہ پڑھنے کے لیے دیا اللہ نے سب کو بیٹوں سے نوازہ ۔یہ اللہ الصمد کا عمل ہے۔ حمل کے دن اوپر ہوں پریگننسی ٹیسٹ کروانے کے آدھے گھنٹے کے بعد بھی پڑھائی شروع کروا دیں۔ پانچ خواتین مقررہ ٹائم میں تین دن تک روزانہ ایک ہزار مرتبہ پڑھیں جو خواتین پہلے دن پڑھیں گی وہ پابندی سے تین دن پڑھیں گی۔
اللہ الصمد سے عزت بچ گئی

میرے والد کے چچا زاد بھائی پر بینک غبن کیس بن گیا۔ ان کے بچنے کی کوئی صورت ہی نظر نہیں آرہی تھی۔ بینک مینجر جو اس واقعہ میں ملوث تھا وہ بھاگ گیا انتہائی پریشان کن حالات تھے۔ گھر کے بڑوں اور بچوں نے نہایت توجہ اور فکر سے اللہ الصمد ہزاروں کی تعداد میں پڑھا اور اللہ تعالیٰ نے عزت کے ساتھ بغیر رسوائی کے اسے اس کیس سے نجات دلادی۔
اللہ الصمد سے ویزا لگ گیا

میرے چھوٹے چچا جنہوں نے انگلینڈ میں ہی شادی کی اور ایک بیٹے کے باپ بنے تو ان کا ویزہ ایکسپائر ہو گیا۔ پارلیمنٹ نے پاکستان واپس بھیج دیا ان کی اہلیہ نے اپیل کی مگر نا منظور ہوگئی ۔میرا آنکھوں دیکھا حال ہے کہ انہوں نے اللہ کے در کا بھکاری بن کر صبح دوپہر شام بس ایک ہی دن میں اللہ الصمد پڑھا اور اس کا ویزہ لگ گیا۔ انگلینڈ میں ابھی بھی کوئی مشکل نوکری کی طرف سے یا بچوں کے مسائل ہوں تو فوراً اللہ الصمد کا اہتمام کرتے اور کرواتے ہیں اور تمام مسائل حل ہو جاتے ہیں۔

اللہ پاک کے اس نام کی کیسی کیسی برکات ہیں۔ اللہ پاک آپ کو اور ہر مسلمان کو دل سے اس کا پڑھنا نصیب کرے اور ہماری پریشانیوں اور آزمائشوں کو اللہ پاک ختم کر دیں آمین۔

Leave a Comment