قصص الانبیا ء

اس برائی کوچھوڑیں اوراپنی آخرت سنواریں

اس فتنوں کے دور میں ایک بڑا فتنہ موسیقی سننا بھی ہے جسے اکثر بے وقوف لوگ روح کی غذا کہتے ہیں ہماری روح کی غذا تو قرآن ہے اسے پڑھیں اسے سنے اور اسے سمجھیں کیونکہ دلوں کا سکون تو اللہ تعالی کو یاد کرنے میں ہی ہے اَلَا بِذِکۡرِ اللہِ تَطۡمَئِنُّ الۡقُلُوۡبُ خوب سمجھ لو کہ ﷲ کے ذکر سے دلوں کو اطمینان ہوجاتا ہے
رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: میری امت میں سے کچھ لوگ شراب پئیں گے، اور اس کا نام کچھ اور رکھیں گے.

ان کے سروں پر باجے بجائے جائیں گے، اور گانے والی عورتیں گائیں گی، تو اللہ تعالیٰ انہیں زمین میں دھنسا دے گا، اور ان میں سے بعض کو بندر اور سور بنا دے گا۔”
ابن ماجہ#4020 صحیح حدیثاور اب تو ہمیں میوزک سننے کی اتنی عادت ہوگئی ہے کہ ہم کھانا کھا رہے ہو پھر بھی ہمیں موسیقی چاہیے ہم نہا رہے ہوں تو بھی ہمیں موسیقی چاہیے اس لیے اکثر لوگ باتھ روم میں ہی موبایل لے جاتے ہیں ہم سفر کر رہے ہو تو بھی ہمیں موسیقی چاہیے ورنہ ہم سے گاڑی ڈرائیو ہی نہیں ہوتی
یہ کیا ہوتا جا رہا ہے ہم سب کو کس طرف جا رہے ہیں ہم ۔۔۔۔۔۔۔۔شیطان کے جال کو پہچاننے کی کوشش کریں اور اپنے آپ کو اس میں سے نکال لیں اور اپنی اولاد کو بھی ۔۔۔۔۔۔۔اللہ ہم سب لوگوں کو اپنی آخرت سنوارنے کی توفیق عطا فرمائے آمین یارب

Leave a Comment