اسلامک معلومات

اسلام کو توڑنے والی چیزیں

اسلام کو توڑنے والی

اسلام کو توڑنے والی چیزیں

اسلام کو توڑنے والی چیزیں : چند ایسی باتیں ہیں جو اسلام کو توڑ دیتی ہیں۔ اور ان میں سے اکثر و بیشتر واقع ہونے والی چند باتیں ہیں ۔لہذا آپ ان سے بچیں اوروہ درج ذیل ہیں۔
اللہ کی عبادت میں شرک کرنا۔
اللہ کا فرمان ہے۔
” یقین مانو کہ جو شخص اللہ کے ساتھ شرک کرتا ہے۔  اللہ تعالی نے اس پر جنت حرام کردی ۔ اور اس کا ٹھکانہ جہنم ہی ہے اور گنہگاروں کی مدد کرنے والا کوئی نہیں ہوگا۔”
اسی طرح مردوں کو پکارنا ان سے مدد طلب کرنا۔ اور ان کے لیے نذر ماننا یا ان کے نام سے جانور قربان کرنا۔  بھی عبادت کے اندر شرک میں داخل ہیں۔

اللہ کے درمیان واسطے اور وسیلے بنانا

جو شخص اپنے اور اللہ کے درمیان واسطہ اور وسیلہ بنائے ۔جن سے وہ دعائیں کرے اور ان سے شفاعت کا سوال کرنے لگے۔ اور ان پر بھروسہ اور تکیہ کریں وہ بالاجماع کافر ہے۔
مشرکین کو کافر نہ سمجھے۔
اور جو مشرکین کو کافر نہ سمجھے یا ان کے کفر میں شک کرے یا ان کے مذہب کو درست قرار دے وہ بھی کافر ہے۔

اسلام کو توڑنے والی چیزیں میں حضرت محمد کے فیصلے پر کسی دوسرے کو اہمیت دینا

جس نےیہ اعتقاد رکھا کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے علاوہ کسی اور کا طریقہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے طریقے سے مکمل ہے یا کسی دوسرے کا فیصلہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے فیصلہ سے بہتر ہے، جیسے وہ لوگ جو طواغیت کے فیصلے کو آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے فیصلے پر فوقیت دیتے ہیں ،تو وہ کافر ہیں۔
اعتقاد رکھنا کہ اسلامی نظام اکیسویں صدی میں تنقید کے قابل نہیں۔
یا یہ  کے مسلمانوں کے پیچھے رہ جانے کا سبب اسلام ہے۔

اعتقاد کے اسلام صرف بندہ اور رب کے درمیان کے تعلق میں محصور ہے، زندگی کے دوسرے شعبوں سے اس کا کوئی تعلق نہیں۔
جو شخص رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی لائی ہوئی شریعت کے کسی بھی چیز سے بغض رکھے، چاہے وہہ اس پر عمل کرنے والا ہی کیوں نہ ہو ،وہ کافر ہے۔ کیونکہ اللہ نے فرمایا:
” زلک بانھم کرھوا ما انزل اللہ فاحبط اعمالھم”
یہ اس لیے کہ وہ اللہ کی نازل کردہ چیز سے نا خوش ہوئے، پس اللہ تعالی نے بھی ان کے اعمال ضائع کر دیے۔”
یاد کرنا یا کروانا

جادو کرنا یا کروانا کفر ہے

۔ جادو کی قسم میں سے ایک قسم” صرف” ہے یعنی شوہر کو جادو کے ذریعے بیوی سے متنفر بنا دینا، اور اسی طرح اس کی دوسری قسم” عطف” ہے یعنی شیطانی طریقہ سے کسی ناپسندیدہ چیز کو پسندیدہ بنا دینا جو اس طرح کا کام کرے یا ایسے کام سے راضی ہو جائے وہ کافر ہے۔

اسلام کے سوا کوئی دوسرا دین تلاش کرنا

“جو شخص اسلام کے سوا اور دین تلاش کرے یا اس کا دین قبول نہ کیا جائے اور وہ آخرت میں نقصان اٹھانے والوں میں سے ہوگا۔”
تمام نوقض کے ارتکاب میں اس بات کا کوئی فرق نہیں کہ کوئی ان کو سنجیدگی یا مذاق یا خوف کی بنا پر کرے۔ ہاں اگر کوئی ان کے ارتکاب پر مجبور کر دیا جائے تو وہ اس حکم میں شامل نہیں ہو گا۔
ہم اللہ سے اس کے غضب کے اسباب اور اس کے دردناک عذاب سے پناہ مانگتے ہیں۔

Leave a Comment