قصص الانبیا ء

آئیےمیثاق مدینہ کی اہم شرائط کے بارے میں جانیئے

آئیےمیثاق مدینہ کی اہم شرائط کے بارے میں جانیئے

آئیےمیثاق مدینہ کی اہم شرائط کے بارے میں جانیئے

میثاق مدینہ کی اہم شرائط مدینہ منورہ کے تمام قبائل امن وامان سے رہیں گے . امن کے قیام میں سب لوگ برابر کے شریک ہوں گے .کسی بیرونی دشمن کے حملے کی صورت میں سب مل کر جسم کا مقابلہ کریں گے .

معاہدہ کی فریق آپس میں خیر خواہی اور بھلائی کا برتاؤ کریں گے
معاہدہ کے فریق مدینہ منورہ کو حرم تسلیم کریں گے. اس میں فساد برپا نہیں کریں گے مظلوم کی مدد کی جائے گی.

وہ ادھر کے فریب میں سے کوئی بھی قریش مکہ کو پناہ نہیں دے گا ہر فریق کو مذہبی آزادی حاصل ہوگی.

باہمی اختلاف

کوئی اس کے مذہبی معاملات میں مداخلت نہیں کرے گا. باہمی اختلاف کی صورت میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا فیصلہ تمام فریق تسلیم کریں گے .کوئی .آدمی اپنے حلف کی وجہ سے مجرم ٹھہرے گا. جنگ کی صورت میں سب فریق مل کر اخراجات برداشت کریں گے

میثاق مدینہ کی اہمیت

میثاق مدینہ کی اہمیت اس معاہدے کی وجہ سے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم مدینہ منورہ کی ریاست کے سربراہ بن گئے .نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے مختلف قبائل اور مذاہب کے لوگوں کو ایک جھنڈے تلے جمع کیا. میثاق مدینہ کی رو سے مدینہ منورہ کے مقدس شہر قرار دیا گیا. جس سے ہر قسم کا خطرہ تھا کہ اسلامی ریاست کی بنیاد رکھی گئی .اس معاہدے کی رو سے مدینہ منورہ کا دفاع مضبوط ہوگیا .میثاق مدینہ انسانی تاریخ میں مذہبی رواداری کی شاندار مثال ہے
جس میں دوسری اقوام کے مذہبی معاشرتی سیاسی حقوق کو تسلیم کیا گیا ہے .

مدینہ منورہ تشریف

مدینہ دور حاضر میں عالمی امن کی بنیاد بن سکتا ہے .رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم مدینہ منورہ تشریف لائے. تو اس وقت مدینہ منورہ میں مختلف قبائل آباد تھے. ان میں مہاجرین اور انصار یہودی اور دیگر قبائل شامل تھے. مدینہ منورہ میں یہود کے تین قبائل بنو قینقاع بنو نضیر اور بنو قریظہ تھے جب کہ زمانہ جاہلیت میں انصار کے قبیلے اوس اور خزرج آپس میں لڑتے رہتے تھے جس سے یہ کمزور ہوگئے تھے.

ان کے مقابلے میں یہود طاقتور مالی طور پر خوشحال تھی. کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے امن و امان برقرار رکھنے کے لئے مدینہ منورہ کے تمام قبائل کو جمع کیا .باہمی رضامندی سے یہ خود مسلمانوں اور دیگر قبائل نے ایک معاہدہ طے پایا جس میثاق مدینہ کہا جاتا ہے

Leave a Comment